67

ڈالرتو کنٹرول ہی نہیں ہو رہا ۔۔۔ سب کو اسحاق ڈار کی یاد ستانے لگی ، اسمبلی سے سابق وزیر خزانہ کی خدمات دوبارہ حاصل کرنے کی خبر آگئی

ڈالر کی اڑان کنٹرول کرنے کیلئے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی خدمات حاصل کرنے کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی گئی . قرارداد مسلم لیگ (ن) کی رکن پنجاب اسبملی عنیزہ فاطمہ کی جانب سے جمع کروائی گئی جس کے متن میں کہا گیا ہے کہ تبدیلی سرکار کا ایک اور کارنامہ ملکی تاریخ میں ڈالر کی قیمت 148 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی اور شنید ہے کہ ڈالر مزید اڑان بھرے گاجس سے مہنگائی کا سونامی عوام کو بہا لے جائے گا، ملکی معیشت پہلے ہی حکومت کی ناکام پالیسیوں کی بدولت تباہی کے دہانے پر کھڑی ہے، ریاست مدینہ کے دعویداروں نے عوام سے دو وقت کی روٹی کا نوالہ بھی چھین لیا ہے، ڈالر کی اونچی اڑان سے عوام کی قوت خرید جواب دے کر رہ گئی ہے، ہر چیز کو پر لگ گئے ہیں .

مہنگائی ہے کہ رکنے کا نام ہی نہیں لے رہی . قرار داد میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ حکومت معیشت کی بحالی اور ڈالر کو کنٹرول کرنے کے لیے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی خدمات حاصل کرے، یاد رہے کہ خبر یہ تھی کہ روپے کی مسلسل بے قدری اور ڈالر کی اونچی اڑان کا سلسلہ جاری ہے اور آج ایک مرتبہ پھر انٹر، اوپن مارکیٹ میں ڈالر مہنگا ہوگیا . اوپن مارکیٹ میں ڈالر مزید4 روپے مہنگا ہونے کے بعد 151روپے کا ہوگیا جبکہ انٹر بینک میں ڈالر ایک روپے 35 پیسے مہنگا ہونے کے بعد ایک ڈالر 147 روپے 87 پیسے کا ہو گیا . دوسری طرف پاکستان اسٹاک ایکسچنج کے 100 اینڈیکس میں آج 804 پوائنٹس کی کمی ہوئی اور پی ایس ایکس 100 انڈیکس 33 ہزار 166 پوائنٹ کی سطح پر آگیا ہے . انٹر بینک میں کاروبار کے دوران ڈالر 1 روپے 35 پیسے مہنگا ہو کر 147.87 روپے کا ہوگیا جب کہ انٹر بینک میں ڈالر کی خریداری قیمت 147 روپے ہوگئی ہے .

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں