77

مہوش حیات کا شوبز انڈسٹری میں جنسی ہراساں کیے جانے پر اہم بیان

گزشتہ ماہ 23 مارچ کو تمغہ امتیاز حاصل کرنے پر تنقید کا نشانہ بننے والی اداکارہ مہوش حیات نے پہلی بار اپنے اوپر ہونے والی تنقید پر واضح بات کرتے ہوئے فلم انڈسٹری سے متعلق اہم بیان دیا ہے۔

مہوش حیات حال ہی میں نجی ٹی وی ’سماء‘ کے مارننگ شو ’نیا دن‘ میں شریک ہوئیں، جہاں انہوں نے تمغہ امتیاز ملنے پر ہونے والی تنقید پر اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ اگرچہ انہیں تمغہ امتیاز حاصل کرنے پر سخت اور نازیبا تنقید کا نشانہ بنایا گیا، تاہم ساتھ ہی کئی لوگوں نے ان کی سپورٹ بھی کی اور انہیں خوشی ہوئی کہ لوگ ان کی مدد کےلیے سامنے آئے۔

مہوش حیات کا کہنا تھا کہ جن لوگوں نے ان پر تنقید کی دراصل انہیں اس بات کا علم ہی نہیں تھا کہ تمغہ امتیاز کیا ہے اور یہ کن شخصیات کو کیوں دیا جاتا ہے؟

اداکارہ کے مطابق ان سے پہلے بھی صبا قمر جیسی اداکارائیں تمغہ امتیاز حاصل کر چکی ہیں اور آنے والے سال میں بھی ایسی اداکاراؤں کو یہ ایوارڈ ملتا رہے گا جو اس کی مستحق ہیں۔

تمغہ امتیاز ملنے کی تقریب کے حوالے سے انہوں نے بات کرتے ہوئے صدر مملکت عارف علوی کو سلام پیش کیا اور کہا کہ 4 گھنٹوں تک چلنے والی تقریب کے دوران صدر مملکت اسٹیج پر کھڑے رہے۔

انہوں نے صدر مملکت عارف علوی کو سلام پیش کیا۔

پروگرام میں مہوش حیات نے اپنے فن سے متعلق بات کرتے ہوئے بتایا کہ اگرچہ انہوں نے شوبز کی دنیا میں ہر طرح کا کام کیا ہے، تاہم پھر بھی وہ تاحال ریڈیو جوکی (آر جے) نہیں بن سکیں اور ان کی خواہش ہے کہ وہ آر جے بنیں۔

مہوش حیات کو تمغہ امتیاز کیسے ملا؟ سوال پوچھنے پر اداکارہ کا کرارا جواب
شادی سے متعلق پوچھے گئے سوال کے جواب میں مہوش حیات کا کہنا تھا کہ وہ مستقبل میں ضرور شادی کریں گی، تاہم ابھی انہوں نے اپنے فن سے شادی کر رکھی ہے۔

اداکارہ نے شادی کے لیے اپنی پسند کے لڑکے سے متعلق وضاحت کی کہ وہ ایسے شخص سے شادی کرنا چاہیں گی جو انہیں مکمل آزادی دے اور مشکل وقت میں ان کا ساتھ دے۔

ان کے مطابق وہ ایسے لڑکے سے شادی کریں گی جنہیں ان کی خودمختاری سے کوئی مسئلہ نہ ہو۔

مہوش حیات نے بلاول بھٹو کی جانب سے شادی کے لیے اپنی پسند کی لڑکی بتائے جانے کے معاملے پربھی بات کی۔
ساتھ ہی انہوں نے بلاول بھٹو کے مقابلے عمران خان کو اپنا پسندیدہ سیاستدان قرار دیا۔

مہوش حیات نے وضاحت کی کہ بلاول بھٹو زرداری بھی اچھے سیاستدان ہیں، تاہم ان کا پسندیدہ سیاستدان عمران خان ہے۔آن لائن تنقید اور تضحیک کئی لوگوں کی خودکشی کا باعث بنی، مہوش حیات
مہوش حیات نے پاکستانی فلم اور ٹی وی انڈسٹری میں جنسی ہراساں کے معاملے پر بھی بات کی اور بتایا کہ خواتین کو جنسی ہراساں کیا جانا نہ صرف پاکستان بلکہ ہر ملک کی شوبز انڈسٹری کا حصہ ہے۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ پاکستان میں بہت ساری خواتین بھی ایسی ہیں جو جنسی ہراساں کے معاملے میں غلط ہوتی ہیں۔

مہوش حیات کے مطابق وہ اس وقت ایسی پوزیشن میں ہیں کہ اگر کوئی انہیں جنسی ہراساں کرے گا تو با کریں گی اور ان کی بات سنی جائے گی، تاہم شوبز کی بہت ساری لڑکیاں ان جیسی پوزیشن میں نہیں۔

اداکارہ نے جنسی ہراساں کے معاملات پر پاکستان میں بات کیے جانے کو بہتر قدم قرار دیا اور کہا کہ اس سے جنسی ہراساں کیے جانے کے معاملات کو حل کرنے میں مدد ملے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں