بنیادی صفحہ / اہم خبریں / سوشل میڈیا کی آڑ میں شہریوں کی گرفتاریاں ناقابل قبول ہیں:احمدی نژاد

سوشل میڈیا کی آڑ میں شہریوں کی گرفتاریاں ناقابل قبول ہیں:احمدی نژاد

ایران کے سابق صدر محمود احمدی نژاد نے سوشل میڈیا پر سرگرمیوں کی آڑ میں شہریوں کو گرفتار کرنے اور انہیں جیلوں میں ڈالنے کی پالیسی کو ایک بار ہدف تنقید بنایا ہے۔
عرب ٹی وی کے مطابق ایک بیان میں احمدی نژادنے کہاکہ حکومت شہریوں کی سوشل میڈیا پر اظہار رائے کو قومی سلامتی کے لیے خطرہ قرار دے کر انہیں حراست میں لے رہی ہے۔ میں پوچھتا ہوں کہ یہ کیسی قومی سلامتی ہے جو سماجی رابطوں کی ویب سائیٹس پر شہریوں کی آزادانہ اظہار رائے سے بھی خطرے میں پڑ رہی ہے؟۔انہوں نے گرفتار کیے گئے افراد کو بنیادی حقوق فراہم نہ کرنے پر بھی حکومت پر تنقید کی اور کہا کہ کسی قیدی کو وکیل کی خدمات حاصل کرنے اپنے دفاع کا حق تک نہیں دیا جا رہا ہے اور دوسری جانب سوشل میڈیا پر کسی کا ایک جملہ بھی پوری ریاست پر بھاری ثابت ہو رہا ہے۔احمدی نژاد نے عدلیہ کی جانب سے شہریوں کے خلاف طاقت کے استعمال میں ملوث ہونے کے اپنے سابقہ موقف کا اعادہ کیا، ان کا کہنا تھا کہ صادق آملی لاری جانی کی زیرنگرانی سپریم جوڈیشل کونسل حالیہ عرصے میں پرامن احتجاجی مظاہروں کو کچلنے میں ملوث ہے۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*