بنیادی صفحہ / اہم خبریں / لندن میں قتل کی وارداتوں میں اضافہ، نیویارک کو پیچھے چھوڑ دیا

لندن میں قتل کی وارداتوں میں اضافہ، نیویارک کو پیچھے چھوڑ دیا

مارچ میں لندن میں قتل کے 22 واقعات پیش آئے جبکہ نیویارک میں 21 وارداتیں ہوئیں — فوٹو بشکریہ بی بی سیلندن نے جرائم کے معاملے میں نیویارک کو پیچھے چھوڑ دیا اور تاریخ میں پہلی بار لندن میں قتل کی وارداتیں نیویارک سے بڑھ گئیں۔

برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق فروری میں لندن میں 15 افراد قتل ہوئے جن کی عمریں 9 سے 30 سال کے درمیان تھیں۔

رپورٹ کے مطابق مارچ میں برطانوی دارالحکومت میں چاقو کے وار اور فائرنگ سے ہلاکتوں کے 22 واقعات پیش آئے، جب کہ اسی ماہ کے دوران نیویارک میں قتل کی 21 وارداتیں ہوئیں۔

خیال رہے کہ لندن اور نیویارک دونوں ہی شہروں کی آبادی تقریباً مساوی ہے، دونوں شہروں میں 85 لاکھ شہری بستے ہیں۔

1990 کے بعد سے نیویارک میں قتل کی وارداتوں کی شرح میں 87 فی صد کمی آئی ہے جب کہ اس کے برعکس لندن میں پچھلے تین سال کے دوران قتل کے واقعات 40 فی صد تک بڑھ گئے ہیں اور ان میں دہشت گرد حملوں کے نتیجے میں ہونے والی ہلاکتیں شامل نہیں ہیں۔

لندن کی میٹروپولیٹن پولیس کمشنر کریسیڈا ڈک نے اپنے حالیہ بیان میں سوشل میڈیا کو جزوی طور پر برطانیہ میں چاقو مارنے کے واقعات میں اضافے کا ذمہ دار قرار دیا تھا۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*