بنیادی صفحہ / اہم خبریں / ترک بغاوت کے مبینہ منصوبہ سازوں کو جرمنی نے پناہ دے دی

ترک بغاوت کے مبینہ منصوبہ سازوں کو جرمنی نے پناہ دے دی

جرمن حکومت نے ترک فوج کے4 سابق اہلکاروں کو سیاسی پناہ دے دی ۔ اس فیصلے کے بعد خدشہ ہے کہ انقرہ اور برلن کے تعلقات میں نئی کشیدگی پیدا ہو سکتی ہے۔
میڈیارپورٹس کے مطابق جرمن حکومت کی طرف سے ترک فوج کے جن 4 سابق اہلکاروں کو سیاسی پناہ دی گئی ہے، ان میں وہ سابق کرنل بھی شامل ہے جس کے بارے میں انقرہ حکومت کا کہنا تھا کہ اْس نے جولائی 2016ء میں ہونے والی ناکام فوجی بغاوت میں مرکزی کردار ادا کیا تھا جبکہ اس فیصلے سے دونوں ممالک کے تعلقات میں نئی کشیدگی کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔سیاسی پناہ دیے جانے کے سبب ان ترک شہریوں کو اب ان پر لگے الزامات کے تحت قانونی کارروائی کا سامنا کرنے کے لیے واپس ترکی کے حوالے نہیں کیا جا سکے گا اور یہ پیش رفت انقرہ حکومت کی خفگی کا باعث بن سکتی ہے۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*