بنیادی صفحہ / اہم خبریں / نہ پانی ، نہ کوئلہ اور نہ ہی شمسی توانائی،

نہ پانی ، نہ کوئلہ اور نہ ہی شمسی توانائی،

دو چینی کمپنیوں نے پاکستان میں ہوا کے ذریعے بجلی پیدا کرنے کا منصوبہ تیار کیا ہے ،منصوبے پر بوسٹن ہیڈکوآرٹر جنرل الیکٹرک کمپنی اور پاور کنسٹرکشن کارپوریشن آف چائنا مشترکہ طورپر کام کریں گی ، یہ کمپنیاں اس سے قبل حالیہ برسوں کے دوران پاکستان میں بجلی کے دس منصوبوں پر کام کرچکی ہیں،انہوں نے بیلٹ اینڈ روڈ منصوبے کے تحت پاکستان میں بجلی پیدا کرنے کے لئےپاکستان کو زیادہ سے زیادہ مدد فراہم کی ہے
جس کا مقصد قدیم شاہراہ ریشم اور بحری شاہراہ ریشم کے روٹ پرواقع ممالک میں تجارت اوربنیادی ڈھانچے کے نیٹ ورک کو ایشیاء ، افریقہ اوریورپ تک بہتر بنانا ہے، بیلٹ اینڈ روڈ منصوبہ چین کا تجویز کردہ ہے جو 2013ء میں شروع کیا گیا ہے ، اس سے جہاں دیگر ممالک کو فائدہ ہو گا وہاں چینی کمپنیوں کو بھی فوائد حاصل ہو ں گے تا ہم اس قسم کی منفی مہم بھی جاری ہے کہ اس منصوبے سے ترقی کے ظاہری مقاصد حاصل کئے جا سکتے ہیں لیکن حقیقی سچ یہ ہے کہ چین اس کوشش کے ذریعے 21ویں صدی میں ایک بڑی طاقت بن کر ابھر رہا ہے اور وہ عالمی منظر پر چھا جائے گا ۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*