بنیادی صفحہ / اہم خبریں / جب عدالت نے نوازشریف کو عمرقید کی سزا سنائی تو مریم نواز کیا کررہی تھیں؟

جب عدالت نے نوازشریف کو عمرقید کی سزا سنائی تو مریم نواز کیا کررہی تھیں؟

ن لیگ کے سوشل میڈیا ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مریم نوازشریف نے کہا کہ جس کو عوام پلس کردیں اسے کوئی مائنس نہیں کرسکتا،مخالفین ہمارے سوشل میڈیا کارکنوں سے ڈرتے ہیں کیونکہ یہ جس نظریے کو لے کر چل رہے ہیں وہ نظریہ نوازشریف ہے۔
انہوں نے کہا کہ جمہوریت میں کٹھ پتلیاں اور امپائر کے اشارے پر ناچنے والے نہیں ہو سکتے، جس کو عوام پلس کردیں اسے کوئی مائنس نہیں کرسکتا۔ان کا کہنا تھا کہ کروڑوں ووٹ لے کر آنے والے منتخب وزیراعظم کی عزت ہونی چاہیے ، منتخب وزیراعظم پر حملہ ہر ووٹ دینے والے پر حملہ ہوتا ہے جبکہ نوازشریف پر حملے کیوں ہوتے ہیں کیونکہ وہ بھی ایک نظریے کے ساتھ ہے۔مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف کے لیے بھی آسان راستہ تھا لیکن انہوں نے آسان راستے پر صحیح راستے کوترجیح دی جس کی وجہ سے نواز شریف پر مشکلات آئیں۔انہوں نے کہاکہ یہاں کوئی استعمال ہورہا ہے اور کوئی استعمال کررہا ہے، اسی لیے پانامہ کا ڈراما رچایا گیا
اور اقامے کا ڈراما رچایا گیا۔انہوں نے پرویز مشرف کا نام لیے بغیر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ منتخب حکومتوں کے تختے الٹنے والوں کی پاکستان میں کوئی جگہ نہیں ۔ انہوں نے ماضی کا قصہ سناتے ہوئے کہامشرف کے دور میں جب عدالت نے نواز شریف کو عمر قید کی سزا سنائی تو اس وقت نواز شریف میرے پیچھے کھڑے ہوئے تھے اور پوری عدالت میں خاموشی تھی۔اس موقع پر میں نے بھری عدالت میں با آواز بلند کہا کہ اللہ کا خوف کرو ایک بے گناہ کو سزا دے رہے ہو۔مریم نواز ‎ نے مزید کہا کہ مشرف کے دور میں نواز شریف نے ہتھکڑیاں اور جیلیں دیکھیں لیکن جھکے نہیں جس کا ثمر عوام کو یہ ملا کہ عوامی نمائندوں کو جلا وطن کرنے والا اج خود جلا وطن ہے،

عوامی نمائندوں کو جلاوطن کرنے والا خود جلا وطنی کی زندگی گزار رہا ہے۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ ہمیں کہا جاتا ہے جب خود پر مشکل آئی تو عدل یاد آگیا لیکن زیادہ تر لوگ ایسے ہوتے ہیں جو مشکل پر جان بچا کر بھاگ جاتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ 2013ء میں شروع ہونیوالا مسلم لیگ (ن) کا سوشل میڈیا آج کہاں پہنچ گیا،ہر ڈسٹرکٹ میں ہر کونسل میں مسلم لیگ (ن) کا سوشل میڈیا پھیل چکا ہے ،مسلم لیگ (ن) کا سوشل میڈیا پاکستان کی گلی گلی میں پھیل چکا ہے،سوشل میڈیا کے جوانوں کو سلام اور انکا شکریہ ادا کرتی ہوں۔

انہوں نے کہاکہ این اے 120 کے الیکشن میں سوشل میڈیا کے میدان میں مخالفوں کودھول چٹائی،سوشل میڈیا پر اتنی بڑی فورس بن چکی کہ مخالفین ان سے ڈرتے ہیں۔انہوں نے شرکاء کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وعدہ کریں،نظریہ نوازشریف کی حفاظت کریں گے،وعدہ کرو،عدل اور انصاف کی اس تحریک میں نوازشریف کا ساتھ دو گے،نظریہ نوازشریف کی حفاظت کرو گے،غلط کو غلط اور صحیح کو صحیح کہو گے۔‎

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*