بنیادی صفحہ / اہم خبریں / دبئی میں ایم کیو ایم کا چھٹا دھڑا بنایا جارہا ہے، فاروق ستار کا دعویٰ

دبئی میں ایم کیو ایم کا چھٹا دھڑا بنایا جارہا ہے، فاروق ستار کا دعویٰ

ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ ایک پیشن گوئی پہلے کی تھی اور اب کہہ رہا ہوں کہ ایم کیوایم کا چھٹا دھڑا دبئی میں بنانے کی تیاری کی جارہی ہے۔

حیدرآباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئےفاروق ستار نے کہا کہ 8 دسمبر کو لطیف آباد کے اکبری گراؤنڈ میں جلسہ عام ہوگا، جوماضی کے تمام جلسوں کے ریکارڈ توڑے گا۔

فاروق ستار نے کہا کہ انہوں نے عدم تشدد والی ایم کیو ایم قائم کی ہے، ایم کیو ایم کے نام پر سیاست کرنے والے تو شاید منقسم ہوں لیکن ایم کیو ایم کا ووٹ بینک ناقابل تقسیم ہے۔
ایک سوال پر فاروق ستار کا کہنا تھا کہ جہاں بھی غیرقانونی تجاوزات اور قبضہ ہے اس پر کارروائی ہونی چاہیئے، لیکن سپریم کورٹ ایسے عمل کے ذمہ داروں کو بھی بے نقاب کرے۔

فاروق ستار نے کہا کہ 1973 میں سندھ کو دیہی اور شہری سندھ میں تقسیم کیا گیا،کوٹہ سسٹم لایا گیا جس سے محرومی پیدا ہوئی، مجھے سندھی بولنے والے بہن بھائیوں کا تعاون چاہیئے،ایک طرف میں کہتا ہوں کہ ہم سندھ کی تقسیم کے خلاف ہیں تو دوسری جانب اس بات آگاہ بھی رکھنا چاہتا ہوں کہ محرومی پیدا ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کو جن برائیوں سے جوڑا جاتا تھا اب ان میں سے کوئی ایک بھی الزام پورے سال میں ہم پر نہیں لگا، ہم نے عدم تشدد والی ایم کیو ایم قائم کی ہے، ایم کیو ایم کے نام پر سیاست کرنے والے تو شائد منقسم ہوں لیکن ایم کیو ایم کا ووٹ بینک ناقابل تقسیم رہا۔

فاروق ستار نے کہا کہ پاک سرزمین پارڑی سے الائنس ماضی کا حصہ ہے، ہم اُس الائنس سے باہر آگئے ہیں جس میں ہمارے اپنے وجود کی نفی کر دی جائے،ہم نے موقع پیدا کیا لیکن فریق ثانی نے موقع گنوا دیا۔

انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کا ایک فیصلہ آیا ہے کہ جن زمینوں پر ناجائز تعمیرات ہوئی تھیں انہیں مسمار کیا جائے، ہم سمجھتے ہیں کہ جہاں بھی غیرقانونی تجاوزات اور قبضہ ہے اس پر کارروائی ہونی چاہیئے، لیکن سپریم کورٹ کی توجہ مبذول کرانا چاہتے ہیں کہ جو لوگ ایسے عمل کے ذمہ دار تھے ان کو بھی بے نقاب ہونا چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے پیپلز پارٹی سے کیسے ہی تعلقات ہوں لیکن ان کا مینڈیٹ ہے جس کی ہم نفی نہیں کرسکتے اگر کوئی ورکنگ ریلیشن بنتا ہے تو ہمارے دروازے کھلے ہیں۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*