بنیادی صفحہ / اہم خبریں / پورا ملک بھی استعفیٰ دیدے تو عمران خان کی باری نہیں آئے گی، احسن اقبال

پورا ملک بھی استعفیٰ دیدے تو عمران خان کی باری نہیں آئے گی، احسن اقبال

وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ اگر 2013 میں عوام نے عمران خان کو وزیراعظم منتخب نہیں کیا تو اس میں ہمارا کیا قصور ہے، خان صاحب اگر پورا پاکستان بھی استعفیٰ دیدے تو بھی آپ کی باری نہیں آئے گی۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ پاکستان کی ترقی کا سفر جس قدر تیزی سے آگے بڑھ رہا ہے تو مخالفین پاکستان کی ترقی کو روکنے کے لئے اس کے امن و استحکام پر حملے کر رہے ہیں کیونکہ امن و استحکام کسی بھی ملک کی معیشت میں ترقی کی پہلی سیڑھی ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس ملک میں امن و استحکام نہیں ہو گا تو وہاں معیشت کا کوئی بھی منصوبہ کارگر ثابت نہیں ہو سکتا۔

احسن اقبال نے کہا کہ جب ہمیں 2013 میں حکومت ملی تو 16 ہزار میگا واٹ بجلی ہمیں ورثے میں ملی، ہم نے 10 ہزار میگا واٹ بجلی نیشنل گرڈ میں شامل کرنے کا وعدہ کیا تھا اور اللہ کا شکر ہے کہ آج چار سالوں میں ہم 7 ہزار میگا واٹ بجلی نیشنل گرڈ میں شامل کر چکے ہیں، باقی دو سے ڈھائی ہزار میگاواٹ بھی نیشنل گرڈ میں ڈال دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ توانائی کے شعبے میں ہم نے جتنے منصوبے شروع کیے اتنے پاکستان کی 70 سالہ تاریخ میں کسی حکومت نے نہیں کیے، آمریت کے 10 سالہ دور میں بھی توانائی کے اتنے منصوبے شروع نہیں کیے گئے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سی پیک کے تحت 27 ارب ڈالر کے منصوبے شروع ہو چکے ہیں، یہ بھی پوری دنیا میں ایک ریکارڈ ہے کہ اس قدر قلیل عرصے میں اتنے بڑے پیمانے پر شروع کیے گئے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ 2013 میں پاکستان کی معیشت جمود کا شکار تھی اور ہمارا شرح نمو 3 فیصد تھا لیکن آج ہماری معیشت 5.3 فیصد پر پہنچ چکی ہے اور اگلے سال تک یہ شرح 6 فیصد تک پہنچ جائے گی۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*