بنیادی صفحہ / اہم خبریں / منگیتر پر تیزاب پھینکنے والے مجرم کو 60 سال قید کی سزا

منگیتر پر تیزاب پھینکنے والے مجرم کو 60 سال قید کی سزا


انسداد دہشت گردی عدالت نے ایک نوجوان کو اپنی سابقہ منگیتر پر تیزاب پھینک کر اس کی زندگی تباہ کرنے کے جرم میں 60 سال قید کی سزا سنا دی۔

عصمت اللہ نامی نوجوان نے لڑکی کو شادی سے انکار پر لاہور کے علاقے ڈیفنس روڈ پر تیزاب کے حملے کا نشانہ بنایا تھا۔

مزید پڑھیں: خواتین پر تیزاب پھینکنے والے کو 14 سال کی قید

بعد ازاں پولیس نے ملزم کو اس کے شہر بھکر سے گرفتار کرلیا تھا جہاں ملزم نے مقامی سیاستدان کے گھر پر متاثرہ لڑکی کو قید کر رکھا تھا۔

پولیس نے عصمت اللہ کے خلاف پاکستان پینل کوڈ کی متعلقہ سیکشنز کے تحت دہشت گردی کی دفعات میں مقدمہ درج کرلیا تھا۔

ٹرائل کورٹ کے جج سجاد احمد نے مجرم کو 39 لاکھ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم بھی سنایا جو متاثرہ لڑکی کو ادا کیے جائیں گے۔
عصمت اللہ کو انسداد دہشت گردی ایکٹ 1997 کی دو دفعات کے تحت 25، 25 سال قید اور پاکستان پینل کوڈ کے سیکشن 324 کے تحت 10 سال قید کی سزا سنائی گئی۔

ڈاکٹروں کے مطابق تیزاب کے حملے میں 24 سالہ لڑکی کا چہرا جھلس گیا تھا اور اس کی آنکھیں متاثر ہوئیں تھیں۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*