بنیادی صفحہ / اہم خبریں / احتساب عدالت میں نواز شریف کے خلاف دائر ریفرنسز کو اکٹھا کرنے کی درخواست پر ’فیصلہ آج‘

احتساب عدالت میں نواز شریف کے خلاف دائر ریفرنسز کو اکٹھا کرنے کی درخواست پر ’فیصلہ آج‘


اسلام آباد کی احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف دائر تین ریفرنسز کو اکٹھا کرنے کی درخواست پر فیصلہ آج سنائے جانے کا امکان ہے۔
احتساب عدالت نے بدھ کو فریقین کے دلائل مکمل ہو نے کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا۔
بدھ کو دوبارہ سماعت ہو رہی اور سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر احتساب عدالت میں پہنچ گئے ہیں۔
سپریم کورٹ کے فیصلے کے اہم نکات
نیب ریفرنسز کب کیا ہوا؟
نواز شریف کی احتساب عدالت میں تیسری پیشی سات نومبر تک ملتوی، حاضری سے استثنیٰ نہیں
سابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر کی عدالت میں پیشی کے موقع پر سکیورٹی کے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں۔
خیال رہے کہ احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے منگل کو اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں نواز شریف کی جانب سے دائر کی جانے والی ان درخواستوں کو دوبارہ سماعت کرنے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا تھا۔
منگل کو احتساب عدالت میں نواز شریف کی جانب سے خواجہ حارث نے دلائل دیے۔
انھوں کہا کہ نواز شریف کے خلاف تینوں ریفرنسزایک دوسرے سے جڑے ہوئے ہیں اس لیے انھیں یکجا کیا جائے۔
خواجہ حارث نے اپنے دلائل میں سندھ ہائی کورٹ کے فیصلوں کے کچھ حوالے دیے جن میں ایک ہی قسم کے ریفرنسز کو یکجا کیا گیا تھا۔ تاہم وہاں موجود نیب کے ڈپٹی پراسیکیوٹر نے کہا کہ ‘چونکہ تینوں ریفرنسز نیب نے خود نہیں بنائے بلکہ سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں بنائے گئے ہیں اس لیے عدالت اس میں کچھ نہیں کر سکتی۔’

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*