بنیادی صفحہ / اہم خبریں / مولانا فضل الرحمان پی ٹی آئی کی اتفاق رائے سے اسمبلیاں تحلیل کرنے کی شدید مخالفت، اس طرح کے لوگ جمہوریت کی حفاظت کریں گے: سربراہ جے یو آئی (ف)

مولانا فضل الرحمان پی ٹی آئی کی اتفاق رائے سے اسمبلیاں تحلیل کرنے کی شدید مخالفت، اس طرح کے لوگ جمہوریت کی حفاظت کریں گے: سربراہ جے یو آئی (ف)


جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے پی ٹی آئی کی طرف سے اتفاق رائے سے اسمبلیاں تحلیل کرنے کی تجویز کی بھی شدید مخالفت کی اور کہا ہے کہ اس طرح کے لوگ پاکستان کی جمہوریت کی حفاظت کریں گے؟ یہ تو کہیں گے کہ اتفاق رائے سے جمہوریت لپیٹ دینی چاہئے۔ فاٹا کے معاملے پر کئے گئے اب تک کے تمام اقدامات کو مسترد کرتے ہیں، اس معاملے کا ازسرنو جائزہ لیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ویسٹ انڈیز نے دورہ پاکستان کے بجائے ایسا اعلان کر دیا کہ پاکستانیوں کے دل ’ٹوٹ گئے، جان کر نجم سیٹھی بھی ہکا بکا رہ جائیں گے
پریس کانفرنس کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے پی ٹی آئی کی طرف سے اتفاق رائے سے اسمبلیاں تحلیل کرنے کی تجویز کی بھی شدید مخالفت کی اور کہا کہ اس طرح کے لوگ پاکستان کی جمہوریت کی حفاظت کریں گے؟ اس طرح تو یہ کہیں گے کہ اتفاق رائے سے جمہوریت لپیٹ دینی چاہئے، اتفاق رائے سے آئین ختم کر دینا چاہئے۔
مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ فاٹا معاملے پر اب تک کئے گئے اقدامات مسترد کرتے ہیں، اس کا ازسرنو جائزہ لیا جائے۔ ہم معاملات کو کبھی متنازعہ نہیں بنانا چاہتے اور فاٹا کے معاملے کو ملکی مفاد میں حل کرنا چاہتے ہیں، حکومت بھی فراخدلی کا مظاہرہ کرے اور فاٹا کے معاملے کا از سر نو جائزہ لیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔فریال مخدوم نے عامر خان کیساتھ اپنی ایک ایسی تصویر شیئر کر دی کہ سوشل میڈیا پر کھلبلی مچ گئی، دیکھنے والوں کی آنکھیں کھلی کی کھلی رہ گئیں، یہ کون سی تصویر ہے اور فریال مخدوم نے کیا لکھا؟ دیکھ کر آپ کیلئے بھی یقین کرنا مشکل ہو جائے گا
ان کا کہنا تھا کہ فاٹا کنونشن میں صوبے پر اتفاق کرنے والے پیچھے کیوں ہٹ رہے ہیں؟ حکومت نے فاٹا کو قومی دھارے میں لانے کی بات کی اور پیچھے ہٹ گئی، حکومت نے رواج ایکٹ کی بات کی اور اس سے بھی پیچھے ہٹ گئی۔ فاٹا کو الگ صوبہ بنانے یا انضمام پر جرگہ ہو رہا ہے، اس کا جو بھی فیصلہ ہو گا قبول ہو گا۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*