بنیادی صفحہ / اہم خبریں / سعودی عرب نے 30 لاکھ شامیوں اور یمنیوں کو پناہ دی

سعودی عرب نے 30 لاکھ شامیوں اور یمنیوں کو پناہ دی


سعودی عرب،
جدہ (محمد اکرم اسد) سعودی عرب نے 30 لاکھ شامیوں اور یمنیوں کو اپنے یہاں پناہ دے رکھی ہے۔ انسانی حقوق اور انسانی وقار کے تحفظ کیلئے حکومتوں اور عالمی اداروں کو مل جل کر کام کرنا ہوگا۔ عالمی تعاون کے بغیر یہ معاملہ انجام نہیں پا سکتا۔ سعودی سفارتی مشن کے نمائندے صالح العمیری پناہ گزینوں کے مسائل سے متعلق اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر کی رپورٹ پر منعقدہ اجلاس میں سعودی عرب کا موقف پیش کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب بین الاقوامی سطح پر اپنا کردار ادا کررہا ہے اور پناہ گزینوں کے حوالے سے عالمی مساعی کو قدر ومنزلت کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔ پناہ گزینوں کی ہائی کمشنری نے آئندہ 5برس کیلئے جو پروگرام پیش کیا ہے وہ بہت مناسب ہے۔

سعودی وفد کے نمائندے نے بتایا کہ سعودی عرب اپنے یہاں 25لاکھ شامیوں کو پناہ دے چکا ہے۔ ان کے ساتھ پناہ گزینوں جیسا معاملہ نہیں کرتا بلکہ ان کے وقار، ان کی سلامتی اور ان کی انسانیت کی پاسداری بھی کر رہا ہے۔ ایک لاکھ 41ہزار شامی طلباءسعودی اسکولوں اور کالجوں میں کسی فیس کے بغیر تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔ تعلیم مکمل کر کے ملازمتیں بھی لے رہے ہیں۔ سعودی عرب نے اردن ، لبنان،ترکی وغیرہ ممالک میں موجود شامی پناہ گزینوں کی مدد کیلئے 800ملین ڈالر سے زیادہ کی نقد امدا د اور امدادی سامان مہیا کیا ہے۔ العمیری نے کہا کہ 5لاکھ یمنی مملکت میں سکونت پذیر ہیں۔ انہیں اقامہ و محنت قوانین سے استثنیٰ دے رکھا ہے۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*