بنیادی صفحہ / اہم خبریں / پشاور کے نواحی علاقے متنی میں علماء نے نکاح پڑھانے کو موسیقی پر پابندی سے مشروط کردیا

پشاور کے نواحی علاقے متنی میں علماء نے نکاح پڑھانے کو موسیقی پر پابندی سے مشروط کردیا


شادیوں اور دیگر تقریبات میں رات گئے تک موسیقی کی محافل سے پیش آنے والی مشکلات کو روکنے کے سلسلے میں علما اور شہریوں کا اجلاس.

پشاور کے نواحی علاقے متنی میں علماء نے نکاح اور جنازہ پڑھانے کو موسیقی پر پابندی سے مشروط کردیا، خلاف ورزی کرنے والوں کے سوشل بائیکاٹ کا فیصلہ کرلیا گیا۔دہشت گردی سے متاثرہ متنی میں امن قائم ہوا تو اب مقامی علماء نے موسیقی پر پابندی لگا دی، جس شادی میں موسیقی ہو وہاں نکاح نہ پڑھانے کا اعلان کردیا، خلاف ورزی کرنے والوں کے سوشل بائیکاٹ کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔موسیقی پر پابندی کے فیصلے پر عملدرآمد کیلئے کمیٹی بھی تشکیل دے دی گئی جو مہم چلائے گی اور انتظامیہ کی مدد بھی حاصل کرے گی۔مقامی افراد کا کہنا ہے کہ شادیوں میں رات گئے تک موسیقی محافل میں اضافے سے ان کا جینا مشکل ہوگیا ہے

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*