بنیادی صفحہ / اہم خبریں / احتساب نہیں،سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے: نواز شریف

احتساب نہیں،سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے: نواز شریف

سابق وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ انہیں احتساب کے نام پر سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جارہا ہے لیکن وہ عدالتی نظام کے احترام میں عدالتوں میں پیش ہورہے ہیں۔

پاکستان روانگی سے قبل لندن میں نجی چینل ‘جیو نیوز‘ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ ’جو احتساب کیا جارہا ہے اس کا مقصد انصاف کا بول بالا کرنا نہیں بلکہ سیاسی انتقام ہے، لیکن پھر بھی عدالت میں پیش ہونے کے لیے پاکستان جارہا ہوں۔‘

انہوں نے کہا کہ ’اقامہ کو بنیاد بناکر نااہلی سے پاکستان کو نقصان پہنچا، سیسیلین مافیا اور گاڈ فادر جیسے ریمارکس دینے والی عدالت کا بہادری سے سامنا کیا، جبکہ ہر طرح کی جانبداری کے باوجود عدالتوں کا سامنا کروں گا۔‘

یہ بھی پڑھیں: لندن سے وطن واپسی سے قبل نواز شریف کا جدہ میں قیام

ان کا کہنا تھا کہ یہ پہلا موقع نہیں جب انہیں اور ان کے خاندان کو عدالتوں میں گھسیٹا گیا، تاہم وہ کبھی احتساب سے نہیں بھاگے، جبکہ بہادری سے پاناما کیس کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کا بھی سامنا کیا۔

نواز شریف نے کہا کہ ’ہماری حکومت کی پالیسیوں سے پاکستان میں مثبت تبدیلی آئی اور ملک ترقی کی جانب گامزن ہوا، آج پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ لوٹ آئی ہے، تاہم معاشی خوشحالی اور استحکام سیاسی تسلسل سے ہی مربوط ہوتا ہے۔‘

واضح رہے کہ نواز شریف 5 اکتوبر کو اپنی اہلیہ کلثوم نواز کی عیادت کے لیے پی آئی اے کی پرواز پی کے 757 کے ذریعے لندن روانہ ہوئے تھے۔

مزید پڑھیں: نواز شریف احتساب عدالت میں پیش، فرد جرم عائد نہ ہو سکی

قبل ازیں وہ 2 اکتوبر کو قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے اپنے خلاف دائر ریفرنسز کے سلسلے میں وفاقی دارالحکومت کی احتساب عدالت میں دوسری بار پیش ہوئے، تاہم ان پر فرد جرم عائد نہ ہوسکی۔

یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے رواں برس 28 جولائی کو پاناما پیپرز کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے نواز شریف کو بطور وزیراعظم نااہل قرار دے دیا تھا جبکہ نیب کو شریف خاندان اور وزیر خزانہ اسحٰق ڈار کے خلاف ریفرنسز دائر کرنے کا حکم دیا تھا۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*