بنیادی صفحہ / اہم خبریں / پشاورکے کرپٹ افسران نیب کے شکنجے میں آگئے، ریفرنس کی منظو

پشاورکے کرپٹ افسران نیب کے شکنجے میں آگئے، ریفرنس کی منظو


پشاور: نیب خیبرپختونخوا نے ڈپٹی کمشنر شانگلہ سمیت دیگر سرکاری افسران کے خلاف بدعنوانی اور اختیارات کے ناجائز استعمال پر ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دے دی۔ نیب خیبرپختونخوا کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق نیب کے ریجنل بورڈ کے اجلاس کے دوران ڈپٹی کمشنر شانگلہ، ڈائریکٹر پی ڈی اے، پی ایس او اور کسٹم حکام کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔ اعلامیے کے مطابق ڈپٹی کمشنر شانگلہ اور اور دیگر کے خلاف 12 کروڑ 30 لاکھ روپے کرپشن کی تحقیقات کا آغاز ہوگا۔ ڈپٹی کمشنر شانگلہ پر الزام ہے کہ انہوں نے اختیارات کا غلط استعمال اور اشتہارات کے بغیر ٹھیکے دیے جبکہ 2016 کے سیلاب کے بعد انہوں نے انفرا اسٹرکچر کی بحالی میں مبینہ خورد برد بھی کی۔ نیب اعلامیے کے مطابق ڈائریکٹر پی ڈی اے امین الدین کے خلاف بھی ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی جن پر آمدن سے زائد اثاثے بنانے کا الزام ہے۔ نیب خیبرپختونخوا کے ریجنل بورڈ کے اجلاس کے دوران اختیارات کے ناجائز استعمال پر پی ایس او اور کسٹم حکام کے خلاف بھی ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی۔ اعلامیے کے مطابق ملزمان نے افغانستان برآمد کی جانے والی پیٹرولیم مصنوعات مقامی مارکیٹ میں فروخت کیں جس سے قومی خزانے کو 2 کروڑ 30 لاکھ روپے کا نقصان ہوا۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*