بنیادی صفحہ / اہم خبریں / سندھ کے477 کرپٹ افسران کو بر طرف کرنے کا حکم

سندھ کے477 کرپٹ افسران کو بر طرف کرنے کا حکم


کراچی : سندھ ہائی کورٹ نے حکومت سندھ کے تیرہ محکموں میں موجود قومی دولت لوٹنےاور قانون کے خوف سے واپس کرنیوالے چار سو ستتر افسران کو برطرف کرنےکے احکامات جاری کر دیئے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ نے لوٹی گئی قومی دولت واپس کرنے والے حکومت سندھ کے چار سو ستتر کرپٹ افسران کو برطرف کرنے کے احکامات جاری کر دیئے، یہ افسران لوٹی گئی دولت نیب کو واپس کر کے اپنے عہدوں کے مزے لے رہے تھے۔

کرپشن میں ملوث دو سو ستانوے افسران کی سب سے بڑی تعداد سینیئر وزیر نثار کھوڑو کے محکمہ تعلیم سے ہے، دوسرے نمبر پر محکمہ بلدیات ہے جس کے اڑتالیس افسران کو نوکری سے نکالا جائے گا، ورکس اینڈسروسزڈیپارٹمنٹ کے تیس ،محکمہ آبپاشی کےستائیس کرپٹ افسران گھر کا راستہ دیکھیں گے۔

محکمہ خوراک کے چھبیس اور محکمہ فنانس کے سولہ کرپٹ افسروں کے نام نکالے جانےوالوں کی فہرست میں شامل ہیں جبکہ محکمہ پولیس کے آٹھ اور سماجی بہبود کے ایک افسر کوملازمت سے ہاتھ دھونا ہوںگے۔

محکمہ جنگلات کے آٹھ، محکمہ صحت اور پبلک ہیلتھ انجینئرنگ کے چھ چھ افسران نے بھی لوٹی رقم واپس کی تھی جبکہ خدمات اور جنرل ایڈمنسٹریشن کےآٹھ افسران کی کرسیاں بھی خالی ہوں گی، محکمہ زراعت اور سپلائی اینڈ انٹر پرائززڈیپارٹمنٹ کےایک ایک افسر کو بھی گھر جانا ہو گا۔

لوٹی گئی دولت نیب کو واپس کرنے والے کرپٹ افسران کی فہرست چیف سیکریٹری سندھ نے حلف نامے کے ساتھ عدالت میں جمع کرائی تھی۔

تعارف: admin

جواب لکھیں

آپ کا ای میل شائع نہیں کیا جائے گا۔نشانذدہ خانہ ضروری ہے *

*